کے سس رظ

5 8 1 7 لت سب رت اہ

افادات

امام ابس زی مطرت تح ایر یرش خیم

ناب

ا اقارات

رہ

.ااظ رع

جمله حقوق بحق ناشر محفوظ ھیں

چا و بج و و وج۔۲ *٭ھد

ظا قش دج ے سآ ے ۔“۔ سا ےد

شس ۔ سس و دب جو چا ّابے

نع ع ےچ جا ئٛ ےچ ہبہ

ار دا ری سواہ عاتم

(۱)

زمر الہنان فیغھم التقرآن

ٴ شم لی رت ولغ رتضرت موا جم شر زرجمااع عفر رامت ب اکم موز پ جرنواز ہاو رج اضل در نع الو مکوجرانواڑ

معخرت موا پاعاا مز ابا اشدی (رل) معمائن انقرمیر برادرالن ؛ممٹما نٹ ٹا ون ءگوتراتوال

حھاوریٹ(کاسح بج رن وک کی ؛کوجراتوالہ

الفتح گزافکس گربرارال 0431-216239 ماع مشیر ٹف منٹرزر یئن روڈلا ہور

اک تار (٭٭۰,)

۱ ۳٣/

۰۰۳۴ء مطال ےاشیان۳۲۲اد

7 کت 2012 بس طابن شال ۱۳۳۳ھ

بے کے پچ

ٰ یر ال نانبل عوت حامح مسحیدہ بازارتھانوال شوج رانوال

0431-6 + 7/41292 8۔-0زاد0

درسدر ان الدارل ء جناح روڈ تل کور ہ ہکوج رانوالہ 7 ہارب اسسلا می اکیٹگیاء ہم تکاں روڈ لکیہ مگو ترانو الہ ٣‏

نے الصرا نکی وبتے_ 7 وف مقطجا تک بگٹ ینہ گ یکنا جا تمزکیں مصر لک مطلب یلوں کےسسل وضاحت رآ نکر مکی ضیلت وفع گمراان کے ن ےکا سب

وف گرا نک وہ می شب را یمیا

ود بیندکی وضاحت اوران کا و رح ود کا ع یلیہ میں ا ےکا جب

"آٛ حفضرت می کا سید دکوا سا مکی دیحوت د یناادرا نکا جو اب

ان۔الذین کفروا لن تغنی عنھم اموالھم کاغان ول

سم الا الرتعد الرتیم

7 صاالله ۱ الوطار ادری ہے سے کی رکا سے

واقعہ بد رکا ڈگر

ال ددوات ایم رتاٹی کےرائشضی ہو ن کی دمی ہیں سے الا مھا ےاگر جا تز مر بے سے حاص٥‏ لکیا جا فۓے رت کے مید ےد نیا سے میو و ںکی طر میں ہوں گے جستیوں کےکھا ن ےکی مقر اراور ا سکیا عم ہہونا

ایمان دا لو ںکی خ بیاں

ان الْدین عنداللہ الاسلام امم ہوم

اب خحجاتصر فآنففضرت خلپےگ کےکمہ میس سے

بل ماب کے ا خلا فکی تضیقت ۱

آ حضرت چپ کے یبر وکا ر قراعص تکک ر جس کے ود یہ کے ساتھ ثا تی ام نیمصیل اور یبد دکا شر

۱ دی ہو ےکا مفہوم

فنڑوں نے ایک دن ش۳٣‏ تقر سی ٠ق‏ کی جن صورجں

فی تک علیہ السلام کے لککا جب

ال تھی کے اما مات ٹا لے می سب یبددیی برا بر جس

ان صور یا کی خیات

زا مزا کے “لق پبورونعدا رٹ یکانظرر

۳۹-_۳٣[آ‎

قل اللّھم مالک الملک کاشا نول عمزت زلت ابقدنھاکیٰ کے ات یس سے

آارہ می خن تو مو ںی ظیریسگق

ان تال یگنر تا نتاناں:

حضرتعمبدا رن ای نمو فک جائمدرادوفات کے وقت یبودونصا رگ سے دوقی جا ئمزکیں ے

علماء 1 0 کوٹ رسجو دی عکومرت گیا

ا کا فرص کی نہ ہون ا کی بددکر سے ہیں

دیاش ددم کے لوک مو جو ہیں ۱ ایک دفعدددییوں نے ان ملک سے غداکاادر نم ہ بکاجناز و نال دیاتھا ٣٦‏ تال یک حبت؟ خر لہ کی جا یش بند ہے ۴ اموووب سم ۱ ۰ اححفرت م ریم علیہاالسلام کے نا نرا ترا نکانعارف ٦‏ ٰ مان کی انتا . کے٦‏ ارت مریم علیہاالسلا مکی پر ور پر اختلاف بن ۱ سکب اص پہ یبددایوں نے 81ا ء می دہ بار ہق کیا 21

ہے دق ھمتاں ہھرےکا سی ای ھ7

موذکی سے ڈر نا ایمان کےخلا فککییں ۵ مچحزات اورگر ام تکا ذکرش رآ ن ماک مل ۱ ٦ے‏ ار نی میٹرو ںکیہنوں سے ہیں :- ٴ ٰ مےے

چٹ کیا ضرا دننھاکی کے جیہ رکوکیں و یلوس طرب ٭ 7 ہے ؟ ۸ے ححقرت م ری علیہا السلا مکی جوا ی کا زکر ۱ ۸۴۲ اش تھاٹ یک تو ںکاشرواجب ے ۳م ا ضر تم ری علیہاالسلا مکی پور کے بارے مل

بت ال تقد لکی انام میں جھ ڑا ۳م ححفرت جج اتیل لی السلا مک یآ میرحت م رم علیہا الا مکیکیفت _ ۸۵ یئ اتی ۲ ۸٦‏ د جال سادیز شن پر مھ رےگاسواۓ جا رج"گہوں کے ۱ دحالی کے استدرارج کا کر ہے۸ تر تھی علیہ السلا مکا ما لک یکود می لکق رس کر ا ۸۸ ا ٤فضرت‏ م لگ کے عل دو سب چنب رککھنا بڑ ہنا جا نے تھے 00 رتپ ]کی علیہ السلا مق رآن ون تکیاعلیعم دمسی گے ۳ ام ےگ یلام ےزور لکار -- ۳ صا کر ری اللہ رجھمکادرجہامام مہدکی سے زیادد ے ت7 ۹۳

حضرت لی علیہ السلام کے حا تکا ذکر ۳ انان س تلق کس رافو ںک یتین اورق رآن ٍ۹ ق رز نگمر یم بھاا ے وا لو ںکا انام ٥‏ حر پسلی علی الس لا صرف تی اس رائیل کے رج ۹٦‏ ہر یوئوں نے بیبود یو ںکی رع اسلا مکا نتشہ بگا زد یا ہے ے۹ یہی علیہ السلا م کے خلا ف یبدد یو کا اتاج ×0 مزا تی عل۔السلام ۹۸ شارت و ا د شی علیہ السلام ٰ ۹۹ ضر ت یی علیہ السلاس کے بر ے میس امس اسلا حمکا یہہ ۓج ٰ راو راگیل یں فرق 7 سچھزواورکرامت 7 فی سکرس نم دانوں کے انسان کے باد مم نظریات س ش مآ نکو پھر نا ۳ ال بدرعت نے دی نکا علیہ رکا رد یا سے ٰ ۷ تحضر گی علیہ السلا سمکا بی اسرائتل سے خطاب ۸ جار یکون تے؟ ۰ وبا یکا طعد : __ ٣٢٣٣‏

یبود مہ ں کا حض ری علیہالسلا ‏ مکوس٭ کی بر لنکا ےکا مطا لہ ا

رز احی تکا فتنہ ۴"( حر تی علہ السلا م کے بارے میں مرز اتد ں کا مقیرہ ۵ ملا نو ںکی وجررسوائی ےا ران کے یسا خو ںکادند ۱ ۳ مابہ سے اتا ب " ۱ ۲۳ جز کا مہوم ۵

سام مم تی سکی تقیقت ۲ ز مان سےا نیا رگ ری اقرار بس ا مم مرف بشقال۷_ ۳ مرک اور ہگ کا یق کو علق نہیں سے سس0 می رر و و ۳۸ مر زین عحر بکا پہلامسرک 7 ۱۳۹ صحا کرام رض این مکی جات -- ۲-

شرلعت یں برع تک تد ید ست قاد انیو ں کا اع لعقیدہ ۴ نر ت عیاش راہن ملا مکی اماخت دارگی ۲ شوا ضس این عاز وراب دو ماشت تھا ۱ آ2

حضرت اشحت اہ نکی کا بیبددہی سے چھگڑ ا ۲

سنج ملع الفا بط سے وج وّہ جو ا گواہ چو رگی ط رح رم سے بندرےتعحمرف ال دت کی کے ز کی الفاظ سے پر مز سر

ضر تی عل السلا س کا نز ول یوہرروں کے نی تھر یف خد دع رآن کک کا مططب وم ہوم

یسودیی شارت ا ورمسلںا فو سک وج یکی دیحوت کے لے ایب جا عحع تکا مطالبہ او رآ خرتہ ٹیل ٰ رر ا کی ہنا تی طامٹ

امت مر ہے مپ ےکا ع٤‏ ایا ز اور یہو دکا کر

ئل کا بکا ایک سعادت مندگر دہ اور را وکف را ختیا رکر نیوالو لک برانجا ٹی ا برققید ولوگوں سے دوتیکی مرا لعت

ارس اق پک یت سی سا لا راو راب ایمان کے گے لو یج

تیص ل کا ا خا رصرف ارد یکو حاصل ے ۔اورمرصت سو دک بیان

اتتففا رکی افاد یت او رکغار بر غل رک شرط

۲٢۱

۲۲

مو

۲۳

٣ےہ‎

گمروش ایام کا فکسفہاورایمالن برا یت فک ٹیکامیان

سب اتی نکی نار جان رکیل جانے دالو ںکابیان

بل پکفرکی اطاعع تکااضحام او تمور مایا کے

اٹ مکرد ہم یس ب ےا عدگ یکا نقصان

میران احد یش صسلمانو ںکی اف رانقری اور

منانٹی نکی ہرز وسرائی ور ال کا جواب

صحا گیلخرس پر دا کان فو

رسول اللہ ا لی و کی ات اخ کان رول الد می کی بعشت خداکااحما نیم ہے اورر الم کی ذ مددار بای ہے نر رام دا کے شم ہیی جیا تہ رید گی او را کک الام فداکارو کا زکل ا نکا تل ا ورانھام ای

بل پکف کی سرگرمیوں ب1ز ردگی ۔سےمما فص گنا رکشل و ےکی تعکرے منافتہ سو بیس ری رر یبودگی ال تھا ی کے بارے شی بر ورای اود ا کا مال اور اد کے إالس یف یکا میا بکون ے؟

ود یش ین ےن تع ردق یفن اور یبد دک مرگزشت کے

چتر پہلروں ‏ اوجر ولا تا :

سے

زع 5-

ظا مکامحاتص راس رای کککیما ضہنظام ہے اور حا یس اس پور رر

ار ما پععلل ہی کاکام ہے ۶۴۱۳م اکا اون جز اسب کے لج برابر ےا حطر ےی

انصاف کے اصول اور شیصملے کے معیار اتی ز ٹیکیش اوراس کے ہال

کا میا پی کے مع رکا بیاتن ۱ جم

4

ا ہے سے اه سے 39ے : : 30۔۳

لنعچج .0< گا

نحمد٤‏ نیارك نعل وضصلى وسلمعلی رسوڑے الکرپہپیر وعلٰ آله واصعابه وازداحه ۰| تباعه |[جمعین ال ندحضرتبولا اج رکسن دلو ہنی خرس تدالو بصن رد ۱ کہ یں کفزگی اعم رس آزادی ولا کی جرد دی سک تا 7 ۱ ۱ رق یلا ساڑٹ کی سا ل ۸ظ ند سے اور رالی سے بعنتنجب دلورندداپس چک رانوں نے اپینے زندک یکر ےج بات ادرجد دج کاپ ڑیالکرے ئے ڈیا اکر ےو سل نے ادبار وزرالے روڑےاب؟ ‏ | ۔ ایب ران اک سے ڑڈدی ادر دوسا ا7ی خلابات و از فارتعا ٰ

زا اتاج وگ

: 2 : 3 لن ل

کی ےسک رام ہکدوبارہ این پال رک کرت سے لے ببض ور کے لن" 20 جائے اوسلرافوں میس ما بھی اما ددم فامصس تکذزع دی سے یجن تک ماے ۔

پا" حضرت شی ان کا یہ ڑھاے اورضح فک زما نا درا سکےاہر ٰ می وہ وزیا سے خصت َ_ ےک رانک ےک رہ اور یھو نات || ہے سان ما ترما م مال ںی پیا ہے کے یہ ا نے نرہ دع ی کے سا تی ص ونیم لیت اس قب کیرالا مت ٠‏ شا ری انشرفرث دللوی رما عالی اوران کے :

ع ود و وج نہاآأآد ت ‏ ات

ٍ شا وع دا نر حضیف شا کب لاد داد نحطرت شاہ رخع ال ریم ے 7بر

۱ کرک کے ری اور آروو ڑا مم او ہیی کر اس وط ےل ںی تور لام یکر ن کا نکر کے سا ذر بشعو انان ار جوا رہ بے اراس ےلیو ہکذر ولا تس یلو اوأا کن اشھار وبا تک مار

کید دی ہکن اص ہیاب یں بات وا ا

ا صراب ےھ با کت یلد جانۓ ول یعی نف العق سم الک زان

ْ ۱ مکی دی سےا لکن وسمضم ت کیرات سے ہاہ اس ےش اس کرانا راس لہ یا 272 1 مس کے لی ین را پ ینف ےگ بت ٰ ےکا م لیا از یثھائفت اوظتن وس کی پردایجے بش ہک نکراک ما

رر ینا رن ہیں مرکم وفپ ےسا سک کا سس تک ٰ نس

ام الوص ین تی تکولاماتسی پ۲ فرص والعزی ہف دا ں جن مال ا کی تحضیتضی تکلاا اح کل یلاہ ری دس الش ی۱ الع مز اورمافنا لی تحت

لااو بدالش دوس رارق سے اسم کرام یف غست می ںتزہوں نے

ا دور می خلزوای انوں میسو نکر یر وی سے جا مسلرئو سک

نا سکرا ےک یع تو کیب وا مس پا سکانصت یی نی گر

ان اہراب ہت ہے ز وسَعَلا لَکا رہ ےک رج ہاب ےو ل رش

ں قرا نرہ سے درو سک اذ شاک نل حا راک

َ یسل ذس بکیایا کڑ یی حرف نخس تکول اوت

ٰ صندرداصت برکات ر ری ذاا تک مان کی سے موں نے٣‏ ۴ اع یں یئ

سج ٹوس دای یں رع وراززکےےکجدروزا نہ درس فا نکر مکاآغا کیا وب جک

ٰ حتتے اجازت دی سر گن ریب ا سلسل ہکولوری بای : ہے سان مار یکنا ا٥یس‏ دس ٹف م س تو الا لا سضر تر سیر علیہ

ال 2با

٥ك‎

۴ د۰ ۓ 4 ۳۳ ٔ

سوسوووتوجہب۔ دک تپًسْودیوسبت-۔

اتد اع و سز ےت

اع ٹئنی. کر تپ سد :

+ سے کہ ےی

کش سے سہتے ۱ سے او رگ رون میں ایا اون نتضرت ولا مرن کی یرہ : امازٹ ماص لے اور ابی کے ا لوب وطر . زم یں نز زگ ک را کے علا سرد أو نت یو کور ان د حرف کے علر وص رات سے ہر نک کم صصسل محنت 2 سے ۔ ا “.و گ[ہەہهٌََٰ[ ٣۳۷۷.8٥٤٤۴۶‏ حذت لصیف کر کے دوخ نکر کے جار ا حلے لیے میں ۔| یک درس پا وا کا نا جع ما ےرس مھ ای زان میں پوت تھا۔ ددم را صا ک ربا رم بسک کک رص ولک صحضات سے یی ناج سال ماسال جاری رپا نو حل شرب ارت ال گت الال ڈیر تسا اونضی ددت مہہ سے لی ہما ٹیا اور دوسال مر مہا تھا اد رج ری دیس اصرۃ لعل ں٦‏ ۶ سنہ شعبان اوزکضان تطبلات نا ا ںدورۂ حم کی رما جھر رای مس س کیک مات نار اور | کا: دور میرم ڈیر ما ہکا ہما .ان جا رو تق تن را نوہیس نو سوہ برا سے علوم دمدا رف ےکن ان کے دام نفلب وین م نل ہوے . چیہ ات بت * ای چا رو لعل سے ریس مل تنعل اکا رطا رر ات وب رالوں١‏ - وں نے حضر تج احررف سے ات امتفال کے ا نی کعرار ا اط از سے ‏ ے لطا ان مسر رتا ہی سے دڈ لک فضل ادڈہ یوتيه من یغآء ان میں عام 7 لو کے امتفاد کے یے ا مس یڈیکڑدالا د زس 5ار ا زاد ہیل ارام زا ھا کے پارے می متحددحضات سن ا یراد متا شس کا زی ہراس ےکر یرکشان با ا ے مال زا دم سے تریا دہ لو فی ل اس ہے ستفد و ھی یس۱ ناس آ۱ ٘ سب سی رکاوف رہ رداص تی مہا 4 ط 1

۰ __ ےک جا کک چک روز ۲۱ے سا کو یو کا پڑھ

لام ہاعرا ڈنتقل۔ :تلم

اوک ھی

اہر کس ریا ر ری یرد ےکم و ہہو جیا ہا سے کا : کے آرررشی مخت لکر]ا سب ےشن مل ہق اس بے رست سی خوا ہش یں پلیشغیں ررطل کرد وڈکییں۔

بن ہرکا رکا قدرم فک یرف س ےکس دق ت مجنا سے ادا کی سوادتتعیقددمت نی اود یکیطرف ےےل تہ ول سے اس کے ای رر ناخ یلع یکرت ساس نآ یکا بکواا مرا ز وج باضا مر صےالعلوم اور ادا ریما نس سا مب اے ا سکاض کا برا ا با سے او رتا 7 ہکات ہے جرد ا سی کان زکنیکردیاے ' مردولوں رز اددان سے وگ سب فا زصر تحضر تن ادرف ڈنل للا مزہ اورویش ٹٹینوں بک مار کورے ما زوا نںکیطرف سے ےکی بر مک تو ا پنیا یں اورا نکی برکارک می و تعلیمات سے وع ححضرت یٹ ٴ ا مظلرسے اناراسمٹ 09 دہ خال مکرتنے او رامش ت لوگو ںکی مات ۱

ا ک تر لئ اید یی كموللیت سے قرا ہو سال اباب اہی وضاحمتیض ور عو ول ےک تونک رید 21 کیک ہاںمیں اوردں دوخطا بکااناز تر خلت ابع گل لیے مض ینار نظ ےککا جو درس و ہمان کے لوا زوا !رپ لے اما این ےکمزائش س ےکر اص و کت کے لی حون ک نے ےی کتبا لاف دنسی اور درا یھر کیل نت کا اہی ض زی ہے نول ے اس یھی کیو کر نیک کیا ساسا ل جب ٦‏ ہنی ےسا رش ت سام دی انا اس صاع خھرے اوازہے ۔|مین یارٹ الحالمین : ااگھار را بدا ری :

- و ھی بھہا س7 ُا جا ہہ ےم چڑھا "٠‏ ' سس سے حرش جس

ر حنقعمای)

ممیسی) _ _ دی ھ وف ۳ 7 بر" ى+ھ < اعوّذ با من الشیطنِ الرجیم و ٢..م‏ تو ۱ ٴي ہشم ا ال حمٰن الر جیم کر و .و2 ٍ ور وق عو و ط ہے سہیے٭ تکس ١ہ‏ الع ۵َالٴلَاإِلة الا هُو, اللحیٰ الْقیُوُم 0 نَزُل عَلَیْک الْکِتب ہو او لک لے سی سے کے ہے حر عر 3 یں ا عو و وا لّ بالحق مصَذَقالِمَا بین یَذیه و انزل التورة والانجیل امن بّل هُدی للناس وانزل الْفرْقان چ اِنْ الذِیْنَ كَفرَوٌا بایتِ الله لهُمْ عَذَابِ شَدِيُد َاللٴعَرِیْز ذُواليقام 8 ان الللا يَعَفی ےىح مھ دع 010 ےکر بج ۔ سد یی کے ا تھے ون عَلَيْهِ شیءْ فی الازْضِ ولافی الما هو الڈی یصور کم فی ارام كَیْف يَشَاءء لَااله الا هُو الْعََيْر الحَكِیْمُ

قیر

الم ا اشتعالی ے۔لارنے یںکوئی مور _ ا عر گھروبی ا کے زرہ ے۔ لیو مہ قائ مر بے والا ہے نول تحلَیک الْکقَاب اک نے نا نز ل کیم کراب ۔بالحق مت کے ہا تلق ماب کم لب کر نے والی سے۔ تسا ا نکماہو لکی۔ بین یْی. بر ال سے پیل نازگل ہو ٗی -3انسزل السورَء ادرناز لک یتما ی نے تو راة -وَالانْ یل ؛اور تل ۔بنْ قْل ء اس قرآانکریح سے لہ ہمڈی :جو برای ت میں ۔للناس؛ اک وقت کےلوگوں کے نول السفقانء اوراں نے از لکیاق رآ نکریم۔ان الْذِیْنْ كَفْرواء ےئک وہ لگ جھوں نے انا رکیا۔ ایت الفرہ ارتا کی آیاتکا۔لَهمْ عدابِ شدبْڈ ءان کےواسلے

سے ہے ٤ 7‏ پوھد ٴً

ےإ ۔ عقزاب ےت و اللہ اورالش تال ۔ غزیز ٤‏ غااب ے۔-ذو انیقّام؛ لہ لے والا ےنات الل َء نے شک ال غالی۔لا ضس خل|و ضوء ٹیس تی اس کول شی فی الاز ضز من

ویج کے تج ۷۔09 : لول١‏ سی لد کا چ؛ بے لی السماعء اور تا عان ُل _ھُو الٰذیٰء وہءووزات ے_يَعو ر کم جو ہار

ور بائاے۔ فی امام : اں کے ہموں میں ۔ تحیف ینان ُء یے جا ہے لا ِلة !لا مز یں کو مددگردی۔الغز یز عطاب ہے .الم مت دالاے۔

اس سور ۃ کا نام سورۃ آ گل عرآن اس واسلے ےک اس سورة میں عمران کے انا نکا ڈکر سے۔ بی اسرائنل کے نادان یش ایک ورگ کیک با دسا عران رح اوران ما غان حر الہ تھے باج وقت میں محر لص کے امام اورخطیب تھ ۔ ا نکو اللہ ای نے ای کل رکا عطا فرما ات کا نام پارون تھاء وی بڑ اتیک اور پارسا تھا گر جوالی میس ىی فوت ہیا ۔ تخت اعم را نکی میو یک من بنت فافوذہ رحمھا اللہ تعالیٰ تماجوان بٹا وت ہوگیا ۔اور سضر تعمران رح اوڈ تا یبھی بڑ ھا ےکوی گے تق محضرت قسنتۂ ران ہوکئی سک ہآ سندہ هم سےسد ال کی د بی خدمتنئیں ہو ےکی تو انہوں نے منت الک اے پہروردگارا ٰ ٰ بے بڑا عطا ,کر ےگا نذ میں وعد وک تی ہو ںکہئٹش ا سکوتیرے و بین اورسحید اٹعک کی خرصت کے لے ون فکررو ںگی ۔(اس واقو کی مز پتفحصیل؟ کے؟ مس ےکی ) ال تھا یکی ندر تکہ ثڑ ےکی جیا ےکی برا ہوئَی ٘ س کا ام مریھ) رکھا یا چو گنی علیہ السلا مکی والدہ اما جدہ ہیں نا مرا نکا مطلب گان ین ما خا نکی اولاد ۔جخرت مرح اورعحضر تھی علیہ السلا مکی 7 ےا لنئیں پچلی یوک حعف رت کسی علی السا مک وس/۰۳ سال لک عم ین سمانوں پراٹھالیاگیاتھا۔ ال جب دہ نازل ہوں ےت حضرت عی یلام کا تجاح ا ۔ۓ

دت

ا از یلم گا جیا کی مکلا سک یکتاب شر مقیدق السغار با بش ذرکور سے اتی ا نکو دولڑ کے عوطا فر ما میں گیئے ء ای کا ا موی ریس گۓ اور دوس ر ےکا نام مخ ای کے بع دکا معلو مکی سکیا ہوگا_ یسور مد بین طیب میس نا یہ ہوئی اور انس سے بے اٹھاسی/ ۸۸ سور از ہو ہچ یامھیں ۔ اس سور کے شی روغ اور دوسآیات ہیں . یرسور 7 بھی ق رآ ا کر مکی ول سورقوں میں سے ے۔ الس ممیت وف مقطعات ہیں نکی بجھت پیل پارے ش لگمزر ۱ گی ے جوضرات اس درس میل ش ریک نہ ہو ا نکیا کی نما طط رعرسش سے ) مقطعا تک مطلب ےک کی لفظ سے اخنقار کے طور بر ایک وف کیا جا ۔ ج ےی کا نام ہومح فی ولغ مج سے ا فک رواو ری جےں ال تاروگے نگمیام بش ایک شجورسحائی تھاء عرصدراز تک نو اۓ وقت میں مع ہش کی ڈائڑزی کے عنوان سے لکعتار ما سے اس کا نام تھا روم ءوذفات پا گے ہیں ۔اس طرع سےتففی کنا جرف بان شی عام ہے۔ جیسے ڈ کا ہک ڈ بی مھش نک مخنیف سے۔امے بی امن کش کا نف ےءوغیرہ ذلک وی وف مقطعات| دن کے تتعلقمفسرح کرام ریم ادقدتواٹی کےعقلف اقو لی ہیں ۔ ایک خی مہ ےک الف سے مراد اللہ شل جلالۂ لام سے مراد جج مل علیہ السلام ءاورمیم سے مھ سی ادل علیہ عم مراد ہیں .تو مفہوس یہ ہن ےگگاکہ برق رآن ال تھال یکی طرف سے بت تل علیہ السلا مکی وساطت سے تعفر ت صلی اللہ علیہ وم برنازل ہوا۔ اورفصح بیرف مات می ںکہالف سے مراد الا الله ں ال دنا لی ںای الاء َبَکمَا مكَلَبَان وال فآ لام ےتخٍف ے اور لام لطف ال ےیجخفف ہے ۔ او رٹیم ملک ای ےت می ىہ بے اتی بھی رب تا کی :طف وکر بھی ارب تعالی کا ء اور ل کی رب لھا ی کا اور مروف مقطعات اس / ۲۹ سورفوں کے شمرو ںا

یس1 تے میں ۔ سے الم؛ ال طە/یلسءحم وغیرہ الله لا الله الا ہو ہا تا ی ہی ےش ٴ کے سو اکونی مو وکیں ے ۔ ال ےے کے مود می ہیں شا حعاجت روا شک لکشافر بادرںء زیر اکم سی تو گا کہ اود تنا لی ہے سوا حاجت روا شک لیکش رادرس :یبر ھا قافن سا زکوئیکٹیں ے۔ اأمسستسی : ببیشہ زم ور يے والا جن سکیا نہ

٭ ہت سر ا ے سس لے گی سس 2 ٥ ٤‏ پر سا 7 حر ٌ 2 ۱ - ٌ گْ چچ 7 1 نگ ١‏ ۓ اقاوت 7 اہدراء ے اور تا گاء و تی وَجۂ نک ڈوالجلال والإڑ کرام ٦‏ کی ارےںا

تبرے پروردگار کی ذات جو بذرگی اورمشمت والا ےا بھعشہ ر نے وا ی ذات صرف پروردگا رگی بی ہے ۔ بائی سب بر مو تآ ‏ گی۔ بیہا لک ککہ جان ٹا لے وانے فرشم بھی رجا میں گےء اللہ تھا لی کے ساکوکی ش ےنیس مر ےکی ایوہ بھیشہقاخرر کے وال تس اك ًب نآ کے گا۔ با ری ش لی فکی ردایت می لآ نا ےک صا کرام رش الد ہم نے فودد عا شرو کی :”الام لی الظھ تغالٰی کہ اللتھالی ہلت ہو الام علی الہ سام لی منیکائییل ۔آ پ سکیا لی ؤلم نے فا کیج ”لسلام لی اللہ لی“ کہ ءکیوکمہمےلفظدہاں بولا جا ا ے٠‏ چہاں خطرہ ہو ارڈ تھا یکون ھکوئی خط روہیں ے۔ کیم اس کے لئ لات کی دع اکر تے ہو تا یم ایک دوس ر ےکوامسلا میم کچ ہیں و ا کا مطلب یہ س ےک اللد تنا لی تھے چورول اور ڈاکوؤں سے س لا کی یش ر ہے ۔مصاب او رآلام سے سلائتی مس ر کے .تو رب تا یکوفو ان و ںکا خطرونیں سے ۔کرتم اس کے لئے می دعاء ”'لسّلام لی الل“ (اے ادن سلائتی میں ر سے )کرواس ل جک رد ون خودسلام سے .ای آابات کے یش نظ رعلمات کرام سک ہی ںکہ اب قکہنا جا نمی سے ۔ک یکلہ بت یکا لف کے د ھا سے

ہے ۔ ا کا گنی ےل زظ٥‏ د٥ء‏ سدرال اولا جا نے تما لصو تکا عرش ہو جیلے ابا گی ءاماں

دہ _ گی هاستاد گی ہمولوئی قی *قاری جا :نف ی گیا ء وی رہکیوکہان سب نے مر سے .ایل تھا یکو مو تکاکوئیخطرویس ہے ۔د تی قوم ہے ینم لوک بے ار ے دن سے وافف ْ کی ہو تے ۔اورائر تھا لی کے سا تج دحقیرت ہوٹی سے تو انشد گ یکدد تن ہیں رف مہ جا تزنٗڑیں ۱ سے۔ الہت اللہ ما ل٣‏ کیل ہ اللہ سما می سکگہیل.. !سی مناصبت سے اک اورمت لبھ یمجہ لا سک کہ رج کل لو عو 1 مرد او رکا عو ری نام ادئموررے لے مس ۔ ما مر الوح رکو وحیر لج ہعبرا لہا رکو جار کت ہس عیدال رک یکو رگن بللہ مان کت ین کہ وحید آیا ےہ جار آ یا سے نو ہے جخ ت گناہ سے کیوگہ وہ فو عبدا گار یں نار کا بندہ ےء جار نو میں سے ہ بدا لرصن ء ر٠‏ ن کا بند و ہے ؛ رین فو نہیں سے۔عبدالومیر ء وجید نو میں سے ۔ک لکی بات ہ ےک ایک عوارت مہ رمے پا د مکرانے کے لئآ کی ء سینے کی مم دح دکی ہیی ہوں ؛ جس ن کہا لال ولا فلا بالل الععلیٰ الْعظیْم. وحیدنز الشتعا یکا نام ےن کیاغم ال تھا ی گی بیوئی ہدہ دو ٹس پٹ گی پی رس نے مچھا کیم بیو ںکہ کہ ٹس عبدا لی دکی چوک ہوں و اس رع ادعورے نام ایا عق ت گناہ سے اور اس رح کی یف جائزکیں سے ۔کیم عبد اکر نکو رشن منادد۔ او رع بدا لپبارکو جبارکہوہ چا رآپ ‏ لگ نے فرب یا تم کے فرختوں کک :ام نے کرسلامکہو گے؟۔شل الام لی جبْرَتیْلَء الام لی بیْکائیل .الام علیٰ اشافیْل یه الام ما کن نیو ں کا نام نےکری لا مکب” گے ۔خ السّلامُ علیٰ مُحَمّدٍ ضَلّی الخَلَیْه رَسَلُمْ الام لی انرام :اسم لی مُوُمیٰعَلیه السُلا الام غلیٰ سی تلیہ الام /اسّلامَ قلیٰ تج علیہ الام الام علئٰ ا شیک عَليہ السلام ای طرح ککننے سی ہرکا نام ن ےگرسلا مکہو لئے کہ المّلام لی ابی

کر ء٘لمّلامُ لی غَمَرَءالملامُ غلیٰ عُنْمَانَءاَلسَلامَ علی عَلِي رَضی ال عَنهُمْ ۶م و ںکوالسلام لیا وَقلی بَا ال ال الین قو اس مم س بآ گے ۔جینی مہ جملہ کین سےتہارا سلام تام فرشت ںکو تم مرو ںکوقرام مومو لکو چا ہے دہ انسالن ہوں یا جنات جا ےآ سافوں برہوں ماز من پرءس بکوخودہنو دی جانا سے نو اتا لی س٠‏ سے پیش زند ور بی والا ادرفیسس مم ےئم ر نے الا اور قمو مکا دوس ا شی ہام ر کے و الا یھ یکیا سے ۔کہ زممتو ںآ سانوں کہ سا ری کاتجا کو اخ رک والی زات اللہ تا ی بی کی ے۔ چنا نہ بخاریی شر ی فک ردایت شل ہے ۔آنت قَيَمْ المّسملوتِ والازْضِ ۔اے پردروگارل 1سانوں اورزمیتو ںکوہقائم ر کے والا ے۔ دیکھوآسا نکتتا وج سے ۔ ین اس کے نی ےکوکی ستو نکوٹی د نوارکییل سے ۔ رام باسمال سے ال رع چا آر اے اور ج ب کک ر بکومنظو رکا ہوگا اىی طرح ر ےکا 'اورز شین اج م رکز برک ہی ہولی سے تو زمیٹوں او رآ سم نو ںکوائم رن والاصرف اللتعا گی ہے نول تھلَیک الْکَابت. اشدتیاٹی نے نان ل فر ما یئ کاب باأْعحتق :ئن کےساتھ ۔سشحخ رآ نک رح ۔اورا سکتا ب کاخ لیے مُصَدةِ قا لِعَابیْنْ نز ناب تد کن والی ہے۔ا ناو ںکی وا سے پل نل ہوک یں ےنا اس سے پیل جو سای کن ہیں نازل ہوگی ہیں ء سے تو ڑ7 ہےءز بور ہے ایل سے۔ا نکی تم بک پی سے ۔کردوگھی ال تناٹ یک یکنا یں ہیں ۔ اوران میں جواصو لی مال بیان ہو ئے جس شلا تو حید رساات ‏ قیامت دخبرہ ا نکی بھی مصرق سے گر اد رکھنا کہ ۔ مدق ان کتابو ںکی سے جوائسل ہیں ریف شدہکمابوں کے مضا ج۲ نکی تد لپ یکین سکرپی .اور اس وقتآ سا ی کنابوں می ق رآ ن شش ریف کے بضی کول یکا ب بھی اپنی اصل شحل می مو جو دکہیں

یک

ہے شلو دا :ضز اور نہ ائیل ء نہ کی ء نا حمارء شہسلاضیلن ‏ شہ سانش وغیرہ۔خرضیکمہ مکی تا مکمابوں می ریف ہوئی ہے۔ اور اس با تکا خود پا در یو ںکویھی ار ار ےکک ہے ہوا سے۔ برنشرف صرف ال تھا یک یکتاب ش رآ ا کر مجمکو تال سے ۔کہ ایک ذ بر اور زم ےکا بھی فرقکیس ااورنہ پڑ ےگا ءانثا ءا شا ی وَآَنْزل الْمورلةء اوراشتما ی نے9را:ازل فرمائیق رآ پکریم کے بعدقام؟ سای کت وں مم نذرا کا مقام بہت بلند ہے کی جائ ا کناب ے۔صدبوں کک الل تھا لی کے کہ رعلاءء اور مشا ر اور یک لوگ ١س‏ پیل کرت در سے ہیں۔ وَالانجیْل 1چیل گی ال تعال یک یکناب ے۔ جوحضرت کی علیہ السلام يہ نازل ہوگی۔ ای وت ال ال ۷ من مشکل ہے۔ ہمارے ہاں ال وقت چار ایٰیں مو جود ہیں می ٗيُخناء مَرْقَسء اور وف کی اأیل او رایک برا سک اشنل ہے۔ د وی میرے پا سس مو جود ہے ۔ برمپاس رح ادف تحضر تی علیہ السلام| کے مھا ی ہیں ۔او ری ء لوا اورمرنسش اورلوقا مہ ارول تا لی ہیں اور پا در صا مان کت ہو سکہ برخاس رح ان کی انیل سپ ید ایام خی یمام رامت حفرت محئی علیہ السطام کا عھالی ہے۔ الک رج بکرد ہکا بکیوں مت نہیں سے > ؟ اور جو حا اتی یی مر تککروہ سکس طرع مع ہوکنیں نے ایل رغاس کے انکار کن کی وجہ می ےکمہاس میں دوحن مقا مات برصرا نے بیرالفا ا مو جود ہی ںک تحضر ت شی علیہ السلام نے فر ما اکر لوک ےر بک بنا مانیں گےء او رر بکا ش ریگ بنا میں گے؛ او رحضرت شحمص٥لی‏ ادل علیہ وم تشربیف لایں گے ءادردہ می رکی صفالی جن لک مکی گے نیس الن الا گی وجہ سے ا کا رک تے ہیں ۔ک اکر ایت ہو گے ہا را بط ٹیٹھ جائیگا۔ ہمارے پاس ف ٹینیس |

۱ طّ

-س- سیٹیس-ٔ-۔-۔-۔۔-۔ج۔جح ول -ح-حصح -ً-٠جحجت-۔۔۔سش ‏ د ے

ر ےگا عا لاک اصل الف بخباس رح الثہ ت کی ہے ۔ جوصھا کی مرج بکردہ ہے اور بائی ار جاکشین کی مرب رو یں ,اور وہ بھی اصل شکل میں موجودکیں ہیں مشا اس /٭٭ ۹؛ سے جو بی کی ہیں ان سالفا اور ہیں اور جوانیچسسوایک/۱۹۰۱ کے بح دک یتح شدہ ہیں ءان کے الفاظ اور ہیں ۔ جوں جوں سا لگمزر تے ہیں ء الف ظط بد لے رج ہیں ہگر ق رآ نکمریم ایل تما یکی ال یراب ہے ۔ جوا نی اص لکل میں مو جود ہے ۔ او را ںکی شال ےکا لکو با وضو ہاج لگ نا اب ہے۔ اس کو پٹ ہنا قذ اب ہے ءا ںکولنا فو اب ہے ءا لکو ٦‏ و جنا نو اب ہے ء ا کو بکھنا نو اب سے این ماد کی رداعت س7 جا ےک ہآ حضرت صلی اش علیہ عم نے رما اک ہاگمر می کن سو کعا تال بڑھتا 02,۰۵ ری مکی ایک ا 1یت بغرۃ سے کے سکھتا سے اس ایک1 ی تک یلیم حاص٦‏ لکر نے کا تو اب سورکعا تن لا سے زیادہ سے۔اور اکر ایک1 دی ہنرار روا تانفل بڑہتاے+ اور ای کک دگی ق ا گرم مکی اکآعت کا تر متا نے انس کا سے زا از ےد ور ا ارات بڑ ھن بھی بپچھ وت گ ےگا :)نو نی الد تھا یک یکتاب ق رآ نکر مم جمارے لے مامت ہے ۔ باتی ہمارے اد رکوتای ‏ ےک ہم نے شہاس لکو پٹ ہما نہ کچھا تی لکیا کاش کہ می سکہیں نافز ہو جاۓ رن سمارے لوک ا کی برکلا تکو دس ےکر اہج کو میں الا می اون پا ذذکرد میں ۔ بش ری تحصب نوہ فر یا وَاَنْزلَ الوْر و اانْجیْلءاوراش توالی نے نز لف مائی تو را اوراچیل ین قی لاس قرآن سے بے هُڈی لَلاس راگ ٰ ان لوگوں کے لے یجن ہے وقت مس تو را بھی برا تی اور اش لبھی ہداب تھی ۔اس وقت کےلگوں کے لے ہو نول الفرَانء ادراہش تھا ی نے ت رآن نز لکیا۔ٹ رآ ن‌کانام

ججحت دی _ جا ق رآ ن بھی ےءفرقا نبھی ء اور فک بھی ے۔ چنا تی ال تھا یکا ارشادے ۔ انا نَحَْیْ نَرّكَ |

َال لفظونء اور بے شک ہ۴ نے می :از لکیاے ذک رمق رآ نکواو رہم ىی اس کی تفاطل تکر نے وا نے ہیس مق رآ نکر ی مکی ک جع کک حفاظت جوگی ہے۔ اور قیا عم تکک طخاخت ہوکی _ائمددقد !اس کےلفطظو ںکی طفاظت ہوئی سے فی کی انت ہو کی سے فی کی ٰ ا لت ہوئی راب دا ہکی ططاظت ہوئی سے۔ رم ال بھی طط طت ہو سے اور ا تھالی ٰ نے اس ام تکو میشرف ا ددرت فی عطا فر ماگ ہق رآ نکر مکو اص ل شحل می ںحفوظط رکھا۔۔ !ئا لین تفر ابایت ال. بے کک و ولوک جنیوں نے الشدتھاٹ یک یآ یا تکا اما رکیا۔ لْهُمْ عَذَابٔ شَدِيْد ان کے ل٤‏ عذاب ےمت۔ وَالل' عَزیْر و انيقھامء اورانڈد تھا ی طااب ہے لہ ین والا سے ۔ انگ یآیت نے ھن سے پیل وضرودربی با ہی ں کچھ یس اک ہآ یت کے جکھنے آمانی ہو ۔ ےہ ھ مس فجران کے عیسائتیوں کاایک ود جو ساعھھ افراد بقل ھا آفحضرتملی الل علیہ میلم کے پا ںآیا۔ ان کے؟ نےکا سب بہتھاکہ ج بک نے ہوکر لا ع بک ماری آیادی اور یھن کے کھعداتے بھی مسلرانوں کےت لے مم سآ مت ران جومکن کے ایک علا تے کا نام ہے ۔ اور دہاش یسا میں کی کشر یتید خوف رد ہو گے ؛اورانھوں نے مور ٥کیا‏ کہ سادا عرب اسلام کے من ے مآ گیا سے اور یبدا ذیل وخوار ہو گے ہیں ۔ زا ہم انگ تھل گنیس رہ سے ءا ورمسلماوں کے تل ملین سے اس واسے؟ییں خود چا با تک کی چا ہے ۔ک ہہ تہارک دفادار ریت ہوگرر ہیں گے ۔ اپزاہمارے ذمہ جونک اور جوقا نو نی ضابطہ ے۔اس سےئ می ںآ گا کیا جائے۔ اور ہمارے تق میں جاۓ جا میں ء چنا خیرسا ٹھآ دمیو کا ہقا فلس مس عیسا توں کے نر ہی ٹوا بھی

میں ٢٣ر‏ سہةادعمائ) جھے۔اورساسی می راور وڈ می بھی تھ نان سے بد بین طیب پیا ور تحضر تی ار علی || لم سے مل تق تکی ںآ رت سک اللہ علیہ وسلم نے فم مایا کت1 دی ہو؟ سکینے گے ہم سا ا دی ہیس ۔ اورسوار یا ں بھی ہیں .آحفضرت صلی اللہ عایہ دعم نے فما ا کہم خر جب لوگ ا أیں:ہمارے پا ات بڑی عمارت یں س ےکس می س بکو ھا رحس ۔اہنا ملف متھیوں کے ہاں می می ھپ رن ےکی کرد بنا ہوں ۔ کے گ ےک ہم اکیٹھےآ تۓ ہیں ور کے ار ہیں گے.. 1 پم لی العلی یلم نے فر ا اھر ہار ے پا میسحچد دی سے .نے گ ےک یں ے ہم سیر ی میں ری کے چنانیہ ا نکوسحیر وی صلی اللہ علیہ ویلم ىی مس ا مرا یاگیا۔عیائیوں ن ےکہا ہم نے انی نما زیھی پٹعنی ہے :کپ مکی ال علیہ دنم نے نر ای جے رہوا جازت ہے محید خبوی صلی الل علیہ یلم می عیمائیوں نے اپی طر کی نما کیا ای۔9 نی اصل مقصد تو ا نکا ساىی مناء واص٥‏ لکرن تھا_ او راس سس میں تو اعد وضوا ری موم | ا مر جے ہگ ری ا یں بھی ہ وی :او رحعضرت صلی علیہ الا مکا ذک ربھی آیا۔ ان میں ٢اا‏ عا رظ بن عکقمہ نا ہی ایک با ما د ری بھی تھا کن لاک حعفر تھپکی علیہ السلام ارم تھا لی کے جے وش رک ہیں ۔آ ضر مکی الف علیہ یلم نے فرما کہ جھے مہ تا کان تھا لا سے پیداہوا سے؟ کین کے ےکیں اور تحضر تھی علیہ السا م نخرت مر کے پیٹ سے پیارا ہو ئے یں 5 کین کے ماں ‏ مہ بات ٹھیک سے ۔آ پ مکی الطد علیہ عم نے فرمایاکہ اش تھی جدکھاسا پا ے؟ نے ےکی او ری علیہ السا مکھا تے نے جے کن گے ما ل سمل ال علی لا نے فرماما مہ ا 5کہالل تھا کی ماں ےکس کے پیٹ شس رس ہوں؟ سک نے گ ےکی اور ۱ ۱ می علیہ الام مال کے پیٹ مم ر سے ہیں؟ سے کے اں ۔آ پسکی ال علیہ عم نے فر مایا ٰ

اہ بنا کا تھائی سےز می نآ سان کیکوئی نے پشیدہ سے؟ نے گ ےکی ۔ اور نی علیہ الام ٰ ار کن کس علیہالسلا مکوجقتاعلم رب تھالی نے دیا ہے؛ای سےۃیادوجیل جات ۔آپ ا ض مم نے ف رما کہ مہ تا کہ الد تھا لی عفان ےکی ؟ کے گ کہیں او می علیہ روم :کین گے 'بابیٰ غاد ھن“ ان پوت؟ ےگ ۔اہے "ابی علیہ انا“ کےاف نٹب ران جمربطریء اوررو ‏ المعا یی دخیر و یس سو جود ہیں .ت2 آ پ مکی الہ علیہ وم نے شر مایا کہ بنا باب کے مشا یہ ہوا سے می علیہ امسلا مکو ایند تھا ہی ےکوان کی ۱ مشا بت سے؟ جم سکی وج ےکم اا نکوالشدنعا یکا بیٹا ادرش کیک جناتے .نو ان کے پا اس ٰ اک وی جوا بکیل تھا اور انہوں ے او رگج یگئی و تک چھوڑرے ‏ من ن کا >0 آ کا ندگی دی تو یا نکرو ںگا :انتا ء اللہ الھز رز ناسل بحتث میں وہ پیٹ می مہ ےکا ٰ بھی ذکر ما تھا۔اوراہ تھا کی رز شن ہآسمان می لکوکی یز شید وکیں ہے لو رما یا اِن فی عل ضی٤‏ فی الازضِ ولا فی السمآ. بے شک اٹ تھا لی برکو یں ےشن مس اور ہآ سان مم مو الد يصوَرکم فی الا زحام دی ذات ے8 مار ی نصومر ا ی ے ال کے رتموں یس ء زی ۓ مک رکا سے کا لا سے گورا سے مج ۱ لاخضاء ےہ بت الاعضاء سے . بیشن بھی صوریں ہیں می سب تمہ ار ب ہیں عخطا کرت ے۔ یف ضا وص ط رح جا بنا ہے ۔لا لہ الا َء تھا لی کے اخیرکوکی منبو وی ہے۔ انغزز ہطااب سے السحکیغم بکمت والا ہے ۔اکرفو ری طور وک یک مرخ تی کرجا یرنہ مھ وک پے گے ہد۔ پللہ اس میں ا سک یکو حکمت ے۔

جِِ مر لَذِ یر عَلَيکَ الْکِىٰب مه ایك مُحْکىتهنْ ا 3 اکب وَأَحَرُ مَُشٰبهت,قَاما الَِیْنَ فی قُلوبهم زَیْغفَيتعُونَ مَ

۔ا ے٢‏

جھسویمپسي ہز ال ال وَالرًا سِخُوْنَ فِیْ الم بقُولُرنَ امَنّا بہ کل مِنْ عِند رَبَتا

۱ رََايَةهر ا 000 رر حمة خمَء نُک أَنٹ الزقًابٰ 6

کی ےس ہج لپ

ہے وف گے ٴ

می ھی ای

ناک خد ا اواب هن طلابنین

3 ڈانيٰن95 ٰ مز اذ ءاش تمالکی ذات ددے۔ انل لیک الب وہس نے نان لک ینمی کاب من ا سکاب مس سے اک جصرے۔ایلٹ کت ہآ تی ہیں ئل۔ صن ام الکتاب, وی وت ںو او اور ہاور یں ہیں مسبت یت نکی مراومتلو میں ے۔ ا اک لن بیس دواوک۔ ضیٰ فکزیهم زغ جن کے ولوں مس ھی ہے ۔فیت عون ا وہ یردی یکر تے ہیں اض ابَة بنلہہ ا نکی جوالن یں تا ہہ ہیں۔ ایس الفسوَء فتتطلبکرتے وۓ۔وَابعفَاءَ ناو لہ اورال کی تفقیقتطل بکرتے ہو ےو ما یلم تاب ادرعالامم کول || ا میں حا ! سک تیق تکو_ ا للھواانشتعالی کے وَاْرايِخونَ فی العلمءادردوجھ پق ؤں|

0 نع و سجوئا‌ شوہ

مم یوون کے ہیں ۔اشا بب * ماس پرایمان لاے. کمن عنْد رتا کیب || ثار ےر بکَاطرف سے ہیں۔ؤضا کو الا او لوا الاب ء اوزکی تحت اص لک ےگ مل مندلوک-زبناء اے ہار ےرب ۔لا ضز غ فلڑ>نا ء نٹ ڑھ اکر ہمارے ولو ںکو_ بَعد || صذبْتناء بعدالی کےک نو نے میں ہدایت دی ۔وَخبْ لَمَامِنْ لڈنک رَحْمَةءاورر ےو ۴ییں اط رف ے ہمت ۔انک انزت الوْہابْء بے شک و بھیادۓ والا ےرَبَتاء اےجارے ہے گی ےشکا ججامع الناس م؛ اکٹ اکر نے واڑا ہے لوگو کو لِيوم, ا ییےدن میس-9ا ا زیبٔ فیه؛ شس می لکول یک یں ے۔اِن ال دے شک اشنا یلا یَخلفٰ الْمبْعَاد ھت گی ران اکرتا۔

بش حر وگیا۔ او رمعم مکی یت دارا لاہ اور مرک ک یی اور جب دارا لا زا ہو جائے و بای مل بھی من مھا جا جاے ۔ نو ں مھ وکہ ج بک کک رمہ نے ہ گیا مار سے عرب پہ اسلا مکا جنڈرالہرادیاگھیا۔ اور سمارا عرب اسلام کے جن ے کے7 گیا۔ ینہ طیہرطا نف تیر کے علائوں پر اعلام نال بآ گیا . سا تج تی مین تھا جنس کے دوعصو نے تے۔اور وا بیہودی یآ باد تھے ۔آ فحضرت مکی اور علیہ وسلم نے دوفو ںصو ہوں ش١‏ مس گور ۱ تھی د گئے۔کان سے معا لات کرو ۔کہ ان شا ئا برغم ن ےچس اد اکر ہے ۔اور مس || رط رٹک کی گے ۔ مدکی بڑے تھرے تے انہوں نے ملا ہرکی طور مرکوئی مراحم ت نیس ا کی ۔ مو نکی علاشش یس تھے تو ان کے سا نے جوش ریس می کی جاٹش مات جاتے تے ءا ور ھن کے سا تھھ گرا نککا علا قہ تھا و ہاں حیسائی آباد تھے ۔ انہوں نے سو جا کہسا را عحرب اسلام

بے بنڑ ے ت ےآ گیا۔او رین کے یبودیوں نے بھی مس لی غ مکردیاہے ۔ اب ہم ان ک تنک ۱

>٦‏ کا ا ا ا

۰

سی

انس رہ کت ۔کیوکمہ ہمارے پاس اق قوت وطا فیس ہ ےک۴ مسلمانو ں کا مق بکرم أاورکک کے ایک حیے مییر وک گی کا نو نکونہ انا وی مشکل بات سے ۔لبفرایک وف یہو جو ار ین طیہہ جاک رحفرت مج صلی اللہ علیہ وعلم کے سا برا راس تنگ وک ے کہ چم تہمارکی وف داررحیت بن کے ر ہنا عاتے ہیں برا ہمارے ذ سے ج عقوت میں ان سے میں آ گا کیا جاۓ وہ ہم لور ےکم سی کے اور جار ے فو قی جوقہماررے ذ مہ ہیں ددم کور ےکر و۔ چنا تا سا ھآ ومیوں مر صتقل ىہ وفدجتں ان کے سا کی پیر ء بی جوا ءادر وڈمردے شائل تے ۔اور خاصاباار وفدتھا۔ ‏ ین طیہ کیا جا نے مس جو فرئکی رما ے دہ شی یل تے۔ ۱ ری رت جک رآفضرتت صلی الد علیہ دسلمکا در یاط تکیا کم نے ان سے ملنا ہے ۔آآپ اع اس دقت مچھد نے ےجھرے می ںتشربیف فرما تھے ۔ جو سید نہوئی کے سا جح تھا نکو تا سن کرس کے یں رر یی کان نز پک اڈ علیہ عم اس کچھ نے سے گر ےکی رح ہیں ۔ او رگوکی پہرے دا رما فظ نیل ےآ مکی ۱ الع لم سے سا ات مدکی تحضرتصٹی